PSL 2019

اگر مگر…

پاکستان سپر لیگ کے چوتھے سیزن کے اب چند ایک میچز ہی باقی رہ گئے ہیں ۔دبئی اور شارجہ میں میچز کے اختتام کے بعد چار میچز ابو ظہبی میں کھیلے جائیں گے جس کے بعد پلے آف سے پہلے آخری چار میچز کا انعقاد لاہور اور کراچی میں ہوگا مگر ابھی تک پوائنٹس ٹیبل پر یہ واضح نہیں ہوسکا کہ کون سی چار ٹیمیں پلے مرحلے میں جگہ بنائیں گیْ
اس وقت پوائنٹس ٹیبل پر پشاور زلمی اور کوئٹہ گلیڈی ایٹرز سات میں سے پانچ میچز جیت کر سرفہرست ہیں جبکہ اسلام آباد نے چار کامیابیوں کے ساتھ چار ناکامیاں بھی سمیٹی ہیں۔روایتی حریف لاہور اور کراچی کی ٹیمیں سات میچز میں تین تین کامیابیوں کیساتھ چوتھے اور پانچویں نمبر پر موجود ہیں جبکہ ملتان سلطانز کو آٹھ میچز میں صرف دو مرتبہ فتح ملی ہے۔
ملتان سلطانزکو فائنل فور میں جگہ بنانے کیلئے ناصرف اپنے دونوں میچز میں کامیابی حاصل کرنا ہے بلکہ یہ دعا بھی کرنا ہے کہ لاہور اور کراچی کی ٹیمیں کوئی میچ نہ جیتیں۔اگر ایسا ہوتا ہے تو پھر پشاور، کوئٹہ اور اسلام آباد کیساتھ ساتھ ملتان سلطانز کی ٹیم بھی پلے آف تک جاسکتی ہے۔
ملتان سلطانز کو ہر صورت میں دونوں میچز جیتنے ہیں اور اگر لاہور اور کراچی کی ٹیمیں ایک ایک میچ میں کامیابی حاصل کرتی ہیں تو پھر ملتان، لاہور اور کراچی تینوں ٹیموں کے آٹھ آٹھ پوائنٹس ہوجائیں گے جس کے بعد سب سے بہتر رن ریٹ کی حامل ٹیم پلے آف میں جائے گی۔
یوں محسوس ہورہا ہے کہ جیسے کوئٹہ، پشاور اور اسلام آباد کی ٹیمیں محفوظ ہیں لیکن حقیقت میں ایسا نہیں ہے۔ اگر اسلام آباد کی ٹیم اپنے اگلے دونوں میچز میں شکست سے دوچار ہوتی ہے اور دوسری جانب لاہور اور کراچی کی ٹیمیں دو دو میچز جیت جاتی ہیں تو پھر دفاعی چمپئن مکمل طور پر ایونٹ سے باہر ہوجائے گی۔ایک صورت یہ بھی ہے کہ اگر اسلام آباد کو دونوں میچز میں شکست ہو، ملتان کو دونوں میں کامیابی ملے اور لاہور کیساتھ ساتھ کراچی کی ٹیم صرف ایک میچ جیت سکے تو پھر یہ چاروں ٹیمیں آٹھ پوائنٹس کیساتھ برابر ہوجائیں گی اور بہتر رن ریٹ کی حامل دو ٹیمیں کوئٹہ اور پشاور کو جوائن کریں گی۔
پی ایس ایل اپنے اختتام کی جانب بڑھ رہی ہے مگر اب بھی کچھ نہیں کہا جاسکتا کہ کون سی چار ٹیمیں اس لیگ کا پلے آف مرحلہ کھیلیں گی اور شاید یہی پاکستان سپر لیگ کی خوبصورتی ہے!

Share