PSL 2019

دی ویلیئرز نے ناممکن کو ممکن بنا دیا!

لاہور قلندرزبمقابلہ ملتان سلطانز
میچ:10۔22فروری،2018، شارجہ

اگر کوئی ٹیم 200رنز بنانے کے بعد بھی ٹی20میچ ہار جائے تو اس سے بڑھ کر بدقسمتی اور کیا ہوسکتی ہے لیکن لاہور قلندرز کے کپتان ابراہام ڈی ویلیئرز نے جس انداز نے میدان کے چاروں اطراف حیرت انگیز شاٹس کھیل کر اس جیت کو ممکن بنایا وہ صرف ’’مسٹر360‘‘ کا خاصہ ہے۔
شاہد آفریدی کے بغیر اور پانچ تبدیلیوں کے ساتھ میدان میں اترنے والی ملتان سلطانز کی ٹیم نے نئی اوپننگ جوڑی کیساتھ اننگز کا آئیڈیل آغاز کیا جب عمر صدیق اور جیمز ونس نے قلندرز کے بالرز کی دھلائی کرتے ہوئے پاور پلے کے چھ اوورز میں 60رنز بنا ڈالے اور اس کے بعد یہ شراکت بڑھتی ہوئی نویں اوور میں 100تک پہنچ گئی۔جیمز ونس کا کھیل اپنے عروج پر تھا جس نے محض 28گیندوں پر اپنی نصف سنچری مکمل کرلی ۔12ویں اوور میں سندیپ لیمی چینے نے جیمز ونس کو آؤٹ کیا تو دائیں ہاتھ کا جارح مزاج اوپنر 41بالز پر 7چوکوں اور 6چھکوں کی مددسے 84رنز بنا چکا تھا۔ عمر صدیق نے 14ویں اوور میں لیمی چینے کو چھکا لگا کر 33گیندوں پر اپنی ففٹی مکمل کی۔ اسی اوور میں شعیب ملک(10)ایک چھکا لگا کر آؤٹ ہوگیا۔15ویں اوور میں شاہین آفریدی نے عمر صدیق(53)کی وکٹ حاصل کرتے ہوئے نہایت نپی تلی بالنگ کی۔لیمی چینے نے اگلے اوور میں ایک چھکے کے بدلے آندرے رسل کی وکٹ خریدی تو ڈین کرسٹیان نے 9گیندوں پر 21رنز کی اننگز کھیل کر ملتان سلطانز کو 200کے جادوئی ہندسے تک پہنچا دیا۔
ایک بڑے ہدف کے تعاقب میں فخر زمان نے چوکے کیساتھ اننگز کا آغاز کیا اور محض تین اوورز میں اسکور 28تک پہنچ گیا۔چوتھے اوور میں محمد الیاس نے سہیل اختر(10)کی وکٹ حاصل کی تو اگلے اوور میں سلمان بٹ نے شعیب ملک کو چوکا لگا کر اپنے پی ایس ایل کیرئیر کا آغاز کیا۔چھٹے اوور کی آخری گیند پر فخر نے چوکا لگا کر لاہور قلندرز کے پچاس رنز مکمل کروائے۔آٹھویں اوور میں فخر زمان نے دو چھکوں اور ایک چوکے کیساتھ محمد الیاس کو لوٹ لیااور پھر اگلے اوور میں شعیب ملک کو چوکا لگا کر 28گیندوں پر اپنی نصف سنچری مکمل کرلی۔دس اوورز میں قلندرز کا اسکور 96/1تھا کہ گیارہویں اوور میں جنید خان نے 35گیندوں پر 7چوکوں اور3چھکوں کی مدد سے 63رنز بنانے والے فخر زمان کو ناصرف آؤٹ کیا بلکہ سلمان بٹ (17)کو بولڈ کرکے ملتان سلطانز کی پوزیشن کو مستحکم کردیا۔جنید خان نے اپنے اگلے اوور میں آغاسلمان کو بھی پویلین بھیج دیا جبکہ برینڈن ٹیلر بھی ریٹائرڈ ہرٹ ہوکر پویلین واپس لوٹ گیا۔ابراہام ڈی ویلیئرز نے چوکے کیساتھ اپنی آمد کا اعلان کیا مگر آخری چھ اوورز میں 81رنز کا حصول آسان نہ تھا۔15ویں اوور میں ڈیوڈ ویزے نے ایک چھکے کیساتھ 11رنز حاصل کیے تو 16ویں اوور میں ویزے نے عرفان خان کو دو چھکے جڑ کر لاہور کی امیدوں کو زندہ کردیا۔ڈی ویلیئرزنے آندرے رسل کی چھ گیندوں پر دو چوکوں سمیت12رنز حاصل کیے تو آخری 18گیندوں پر41رنز اب بھی آسان نہ تھا۔جنید خان کا آخری اوور لاہور کیلئے کامیابی کی نوید ثابت ہوا جب ایک چھکا لگانے کے بعد ڈی ویلیئرز کو جنید نے کیچ کروایا تو تھرڈ امپائر نے نو بال دیتے ہوئے اے بی کو نئی زندگی دے دی جس کا جشن لاہور قلندرز کے کپتان نے چھکا لگا کر منایا۔رسل کو دو چھکے لگا کر ڈی ویلیئرز (52*)نے 26بالز پر ففٹی مکمل کرکے قلندرز کو جیت کے قریب پہنچا دیا۔آخری اوور میں 9رنز مشکل نہ تھے مگر کرسٹیان نے میچ کو آخری گیند تک کھینچ لیا جب لاہورکو جیت کیلئے تین رنز درکار تھے کہ ویزے نے لانگ آف کے اوپر سے چھکا لگا کر لاہور قلندرز کو تاریخی کامیابی دلوادی اور محض 20گیندوں پر 5چھکوں کی مدد سے 45*رنز کی فتح گر اننگز کھیلی۔

مختصر اسکور کارڈ:
ملتان سلطانز:(20)200/6
جیمز ونس84،عمر صدیق53،سندیپ لیمی چینے3/46
لاہور قلندرز:(20)204/4
فخر زمان63،ابراہام ڈی ویلیئرز52*، ڈیوڈ ویزے45،جنید خان 3/39

مین آف دی میچ:ابراہام ڈی ویلیئرز

Share