PSL 2019

چار دن، سات میچز اور دبئی کی دیوانگی!

فرحان نثار

پاکستان سپر لیگ کے چوتھے ایڈیشن کا پہلا مرحلہ دبئی میں کھیلا جاچکا ہے اور اب آج سے میدان سجے گا شارجہ میں۔14سے17فروری تک دبئی میں پی ایس ایل کے سات میچز کھیلے گئے جس میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی ٹیم مسلسل دو کامیابیوں کیساتھ سرفہرست ہے جبکہ دیگر چاروں ٹیموں نے کم از کم ایک کامیابی ضرور حاصل کی ہے۔
دبئی میں کھیلے گئے سات میچز میں چار مرتبہ ٹیموں نے پہلے کھیلتے ہوئے 150سے زائد رنز کا مجموعہ اسکور بورڈ پر سجایا جبکہ ایک مرتبہ لاہور قلندرز کی ٹیم تین ہندسوں میں بھی داخل نہ ہوسکی۔اگر پہلی اننگز میں اوسط اسکور کی بات کی جائے تو یہ 144ہے۔دوسری جانب پاور پلے میں ٹیموں کا اوسط اسکور 42رہا ہے۔اگر گزشتہ سیزن میں دبئی میں کھیلے گئے پہلے مرحلے کی بات کریں تو آٹھ میچز میں پہلی اننگز کا اوسط اسکور 127اور پاور پلے میں اوسط اسکور 38رہا۔اس اعتبار سے سیزن فور میں دبئی میں کھیلے جانے والے میچز میں وکٹوں کا برتاؤ بہتر رہا ہے اور یہاں بیٹسمینوں نے گزشتہ سیزن کی نسبت آسانی سے رنز بنانے میں زیادہ مشکلات درپیش نہیں آئیں۔

پہلے سات میچز میں اسلام آباد یونائیٹڈ اور لاہور قلندرز کے تین تین میچز کے علاوہ دیگر تمام ٹیموں نے دو دو میچز کھیلے ہیں اور پاور پلے کے اعتبار سے تمام ٹیموں کی کارکردگی میں نمایاں فرق ہے جو پوائنٹس ٹیبل پر ان کی پوزیشن پر بھی اثر انداز ہوا ہے۔دونوں میچز جیتنے والی کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کا پاور پلے میں رن ریٹ 9.00سے ہے جو اسے دوسری ٹیموں سے ممتاز کرتا ہے جبکہ لاہور قلندرز(7.72)، پشاور زلمی(7.25)اور کراچی کنگز (7.08)نے سات رنز فی اوور سے زائد کے رن ریٹ سے اسکور کیا جبکہ اسلام آباد یونائیٹڈ مجموعی طور پر سب سے زیادہ 8وکٹیں گنواتے ہوئے 6.44کا رن ریٹ ہی حاصل کرپائی۔ملتان سلطانز نے پاور پلے میں سب سے زیادہ دفاعی حکمت عملی اپنائی اور پاور پلے میں کم ترین اسکور (24/1)کیساتھ ملتان سلطانز کا رن ریٹ 5.17رہا جو دیگر تمام ٹیموں کے مقابلے میں سب سے کم ہے۔

دبئی کے میچز میں نوجوان کھلاڑیوں کی جانب سے عمدہ پرفارمنس بھی نہایت حوصلہ افزا ہے جنہوں نے لگ بھگ تمام سات میچز میں اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوایا۔ ملتان سلطانز کے فاسٹ بالر علی شفیق اس ٹورنامنٹ میں مین آف دی میچ حاصل کرنے والے پہلے ایمرجنگ کھلاڑی بنے جس کے بعد لاہور قلندرز کے فاسٹ بالر حارث رؤف نے بھی یہ اعزاز اپنے نام کیا۔اس کے علاوہ کراچی کنگز کے لیفٹ آرم اسپنر عمر خان نے ابراہام ڈی ویلیئرز کی وکٹ حاصل کرکے شہرت پائی تو پشاور زلمی کے لیگ اسپنر ابتسام شیخ دوسرے سال بھی اپنی کارکردگی سے دیکھنے والوں کو متاثر کررہے ہیں۔

پاکستان سپر لیگ کے چوتھے سیزن کا سلوگن ’’کھیل دیوانوں کا‘‘ ہے اور دبئی میں کھیلے گئے میچز میں یہ دیوانگی بھرپور آب و تاب کیساتھ دکھائی دی اور آج جب شارجہ کا تاریخی میدان پاکستان سپر لیگ کے میچز کی میزبانی کا آغاز کرے گا تو نا صرف شائقین کرکٹ کی دیوانگی عروج پر ہوگی بلکہ میدان کے اندر بھی بھرپور کرکٹ دیکھنے کو ملے گی۔

Share